پاگل خانے کے قریب ایک لڑکی کی گاڑی پنکچر ہوئی وہ ٹائر تبدیل کرنے لگی تو۔۔۔۔

A girl’s car was punctured near the insane asylum and she started changing tires.

پاگلوں کی پناہ گاہ کے قریب ایک لڑکی کی گاڑی پنکچر ہو گئی اور وہ ٹائر بدلنے لگی۔
ڈاکٹروں کا ایک بورڈ ان کی صحت کا جائزہ لینے بیٹھا اور ان سے سوالات کرتا رہا۔
جس کا اس نے درست جواب دیا۔ پھر انہوں نے اس سے پوچھا کہ وہ جانے کے بعد کیا کرے گا؟
تو اس نے جواب دیا کہ میں تمام پاگلوں کو الوداع کہوں گا، اور ان سے کہا کہ میں ان کو معاف کر دوں گا اور ان کے جانے سے پہلے تمام کھڑکیاں توڑ دوں گا، اسی وقت ان کا انٹرویو ختم ہو گیا۔ تقریباً چھ ماہ بعد، بورڈ نے دوبارہ ملاقات کی، ان کے سوالات کا جواب دیا۔ آخر کار اس نے پوچھا کہ اگر تم یہ پاگل پن چھوڑ دو گے تو کیا کرو گے جس پر اس نے جواب دیا کہ میں سب سے پہلے اپنے بھائیوں کو اپنی دکانوں پر قبضہ کرنے کا ذمہ دار ٹھہراؤں گا۔
پھر میں چار سوٹ سلائی کرتا اور ایک زیر جامہ خریدتا۔ اس نے پوچھا صرف ایک زیر جامہ کیوں؟ تو اس نے کہا کہ میں اس کا لچکدار نکال دوں گا، اس کی ایک گلیل بناؤں گا اور آکر تمام کھڑکیاں توڑ دوں گا۔ ایک صحافی ایک ورکاہولک کی پناہ میں آیا۔ اس نے بہت سے پاگلوں کو لان میں آگے پیچھے بھاگتے ہوئے، ‘برسٹ آؤٹ’ اور موٹر سائیکل ایکشن کرتے دیکھا، ایک شخص لان کے پاس خاموش کھڑا تھا، جس سے صحافی نے پوچھا کہ یہ کیا ہے؟ کر رہےہیں
تو اس نے جواب دیا کہ آدھی چھٹی کا وقفہ تھا، وہ مزے کر رہے تھے۔ صحافی وہاں سے چلا گیا اور واپس چلنے لگا اور وہ آدمی وہیں کھڑا تھا۔ اس نے صحافی سے پوچھا کہ کیا تمہارے پاس سواری ہے؟ اس نے کہا: نہیں، اس نے کہا، کیا تم گرمی اور دھوپ میں سیر کے لیے جاؤ گے؟ جس پر صحافی نے کہا کہ کوئی بات نہیں میرا دفتر زیادہ دور نہیں ہے۔ آدمی نے جواب دیا: نہیں! میں تمہیں ایسے نہیں جانے دوں گا، میرے پیچھے بیٹھو، جلدی سے باہر آؤ۔ ایک سرکاری اہلکار پاگلوں کی پناہ گاہ کی طرف چل رہا تھا جب اس نے دیکھا کہ ایک پاگل اپنے کمرے میں سسک رہا ہے اور بار بار اپنا سر دیوار سے ٹکرا رہا ہے۔ جب افسر نے اس سے وجہ پوچھی تو اسے بتایا گیا کہ اسے ایک لڑکی سے پیار تھا جس سے وہ شادی نہیں کر سکتا، اس لیے وہ اپنے غم میں ہوش کھو بیٹھا اور سارا دن یہ کام کرتا رہا۔ جیسے ہی وہ آگے بڑھا تو اس نے ایک اور پاگل کو چیختا اور روتے دیکھا۔ افسر نے وجہ پوچھی تو بتایا گیا کہ اس نے لڑکی سے شادی کر لی ہے! ایک شخص کار میں سفر کر رہا تھا کہ پاگل خانے کے سامنے اس کی گاڑی کا ٹائر پنکچر ہو گیا۔
وہ نیچے اترا، ٹائر اتار کر اوپر چلا گیا۔ جب اس نے نٹ کو سخت کیا تو اس نے دیکھا کہ نٹ بولٹ غائب تھے جو شاید قریب ہی کھیل رہے کسی بچے نے اٹھا لیے تھے۔ وہ سر پکڑ کر بیٹھ گیا اور سوچ رہا تھا کہ آگے کیا کرنا ہے۔ پاگلوں کی پناہ گاہ کی دیوار پر بیٹھے ہوئے پاگلوں میں سے ایک نے کہا، “بچے ہوئے ٹائروں میں سے ایک نکالو اور اسے ورکشاپ میں باندھ دو۔” اس نے حیرت سے اس کی طرف دیکھا اور کہا: کیا تم پاگل ہو؟ اس نے پاگل کہا: میں پاگل ہوں، بیوقوف نہیں۔ برطانیہ کے وزیر اعظم سر ونسٹن چرچل ایک بار شہر کے دورے پر تھے جب انہوں نے ایک پاگل سے پوچھا: تمہارا نام کیا ہے؟
جس پر اس نے دیوانہ وار کہا: پہلے یہ بتاؤ کہ تم کون ہو؟ چرچل نے جواب دیا: “میں یونائیٹڈ کنگڈم کا وزیراعظم ہوں، میں یہاں آکر لوگوں سے یہی کہتا تھا!” ایک اور دیوانے نے کہا: احمق! یہ اس دیوار کا کیل نہیں ہے اور یہ کہہ کر وہ کیل سامنے کی دیوار پر لے گئے اور وہاں کیل سیدھی کرتے ہوئے کہا: یہ اس دیوار کا کیل ہے، چلو ۔

اگر آپ کو اس مضمون میں تحریری غلطی نظر آتی ہے تو براہ کرم نیچے کمنٹ کریں۔

پاگل خانے کے قریب ایک  لڑکی کی گاڑی پنکچر ہوئی وہ ٹائر تبدیل کرنے لگی تو۔۔۔۔
0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
PHP Code Snippets Powered By : XYZScripts.com